بند کریں
شاعری فراق گورکھپوری

دن رات شجر حجر کی نبضیںہیںتپاں

-

Din raat shajer


(275) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان