بند کریں
شاعری فراق گورکھپوری

کس درد سے دل کراہتا ہے

-

Kis dard sey


(230) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان