بند کریں
شاعری مزاحیہ شاعری

تعبیروں کی حسرت میں کیسے کیسے خواب بنے

-

tabeeroon ki hasraat main kaise kaise khawab baney


(692) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان