بند کریں
شاعری گلزار

دن کچھ ایسے گزرتا ہے کوئی

-

Din kuch aise guzarta


(229) ووٹ وصول ہوئے