بند کریں
شاعری حمید کوثرکبھی تو صبح کے آثار دیکھوں

(243) ووٹ وصول ہوئے