بند کریں
شاعری حسنین سحر

کوئی درپیش مصیبت ہے تو ہو کیا کیجے

-

koi darpesh musibat hai tu ho kiya kije

حسنین سحر

hasnain sahar

(0) ووٹ وصول ہوئے