بند کریں
شاعری حسنین سحریہ ہم کہ بزمِ دہر میں ویسے تو کیا نہ تھے

(6) ووٹ وصول ہوئے