بند کریں
شاعری حسن جاوید

مری آنکھ ہجر کا دشت ہے

-

mere ankh hijar ka dasht hai


(197) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان