بند کریں
شاعری حرارانا

اب یہ سوچا ہے کہ تعزیر سے باہر نکلوں

-

abb yeh socha hai k tazeer se bahir nikloon


(253) ووٹ وصول ہوئے