بند کریں
شاعری ادریس بابر

دل کوئی آئنہ نہیں ، ٹوٹ کے رہ گیا تو پھر؟

-

dil koi aina nahi toot k reh giya tu phir


(171) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان