بند کریں
شاعری ادریس بابر

ربط اسیروں کو ابھی اس گلِ تر سے کم ہے

-

rabt aseen ko abhi iss gull e tar se kaam hai


(176) ووٹ وصول ہوئے