بند کریں
شاعری افتخار عارفحرف بریاب

انہی میں جیتے انہی بستیوں میں مررہتے

-

Anhey Main


(219) ووٹ وصول ہوئے