بند کریں
شاعری عرفان صدیقی

آج پھر تیر رگ جاں پہ گراں گزرا ہے

-

aaj phir teer rag e jaan pey giran


(257) ووٹ وصول ہوئے