بند کریں
شاعری عرفان صدیقی

جب رزق مققدر ہے تو کیوں خاک سے لے آئوں

-

jab rizq muqadadar hai tu kiyon khaak


(362) ووٹ وصول ہوئے