بند کریں
شاعری جمال احسانی

کب پاؤں فگار نہیں ہوتے کب سر میں دھول نہیں ہوتی

-

kab paoon figaar nahi hote kab sar main dhool nahi hoti


(188) ووٹ وصول ہوئے