بند کریں
شاعری جمال احسانینشے کی لہر طاری ہو رہی ہے

(191) ووٹ وصول ہوئے