بند کریں
شاعری جون ایلیا

سینہ دہک رہا ہو تو کیا چپ رہے کوئی

-

Seena dehak raha


(368) ووٹ وصول ہوئے