بند کریں
شاعری جوازجعفریزبان گر ہوں زباں توڑتا بناتا ہوں

(420) ووٹ وصول ہوئے