بند کریں
شاعری جگر مراد آبادی

اب تو یہ بھی نہیں رہا احساس

-

Abb to yeh bhi nehin raha


(273) ووٹ وصول ہوئے