بند کریں
شاعری جگر مراد آبادینوید بخشش عصیاں سے شرمسار نہ کر

(214) ووٹ وصول ہوئے