بند کریں
شاعری جوش ملیح آبادی

تجربے کے دشت سے دل کو گزرنے کے لیے

-

tajarbay kay dasht se dil ko guzarnay k liye


(407) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان