بند کریں
شاعری کلیم احسان بٹدو دو دروازے تھے تین دریچے تھے

(87) ووٹ وصول ہوئے