بند کریں
شاعری کاشف کمال

مٹ گئیں چاہتیں اَک گلہ رہ گیا

-

mitt gayeen chahtain ik gilla reh giya


(171) ووٹ وصول ہوئے