بند کریں
شاعری کاشف کمالوقت کی شاخ سے ٹوٹا کوئی پتا ہوں میں

(361) ووٹ وصول ہوئے