بند کریں
شاعری کاشف کمال

وقت کی شاخ سے ٹوٹا کوئی پتا ہوں میں

-

waqt ki shaakh se toota koi patta hon main


(361) ووٹ وصول ہوئے