بند کریں
شاعری کاشف رحمان

سفر ہے‌ خواب ہے منظر ہیں اور ستارے ہیں

-

safar hai khawab hai manzar hai or sitare hain

کاشف رحمان

kashif rehman khan

(295) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان