بند کریں
شاعری خلیل الرحمان اعظمیخوار ہوئے بدنام ہوئے بے حال ہوئے رنجور ہوئے

(299) ووٹ وصول ہوئے