بند کریں
شاعری خواجہ الطاف حسین حالیدیوان حالی

کچھ کرتے ہیں جو یاں وہی انگشت نما ہیں

-

Kuch karte hain


(200) ووٹ وصول ہوئے