بند کریں
شاعری خواجہ میر درددیوان دردلیتا نہیں کبود کی اپنے عناں ہنوز

(232) ووٹ وصول ہوئے