بند کریں
شاعری میرانیسکوئی انیس کوئی آشنا نہیں رکھتے

(346) ووٹ وصول ہوئے