بند کریں
شاعری محبوب خزاں

ہم آپ قیامت سے گزر کیوں نہیں جاتے

-

hum app qiamat se guzar kiyon nahi jate


(223) ووٹ وصول ہوئے