بند کریں
شاعری محبوب صابر

عشق بھی کیسی بلا ہے جاناں

-

ishq bhi kaise bala hai janaa


(149) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان