بند کریں
شاعری میاں امر

میرے ارمانوں کا خون ہوتا رہا برسُوں

-

mere armanoon ka khoon hota raha barsoon


(83) ووٹ وصول ہوئے