بند کریں
شاعری میر تقی میرہے تہِ دل‘ بتوں کو کیا معلوم

(116) ووٹ وصول ہوئے