بند کریں
شاعری میر تقی میر

کوفت سے جان لب پہ آئی ہے

-

kofat se jan lab pey aayi hai


(139) ووٹ وصول ہوئے