بند کریں
شاعری میر تقی میرنکلے ہے چشمہ جو کوئی جوش زناں پانی کا

(123) ووٹ وصول ہوئے