بند کریں
شاعری محمد ابراہیم ذوق

عبث جاں منتظر ہونٹوں پہ ہے وہ شوخ کب آیا

-

aabs jaan montazir honton py hai wo shokh kab aaya


(285) ووٹ وصول ہوئے