بند کریں
شاعری محسن چنگیزی

کیسے خیموں پہ کھلے بابِ خبر پانی کا

-

kaise khemoon pey khule bab e kabar pani ki


(319) ووٹ وصول ہوئے