بند کریں
شاعری محسن نقویرات باقی رہے کہ ڈھل جائے

(500) ووٹ وصول ہوئے