بند کریں
شاعری مبشر سعید

دل نے روکا تھا مگر چھوڑ آیا

-

dil ne roka tha magar chor aya


(37) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان