بند کریں
شاعری محمد اظہار الحق

پھر گرد نے لی ہے انگڑائی کوئی آئے گا

-

phir gard ne li hai angrai koi aaye ga


(338) ووٹ وصول ہوئے