بند کریں
شاعری مرتضیٰ برلاسکتاب سادہ رہے گی کب تک کہیں تو آغاز باب ہو گا

(409) ووٹ وصول ہوئے