بند کریں
شاعری مصطفی زیدیغزلیں نہیں لکھتے ہیں قصیدہ نہیں کہتے

(275) ووٹ وصول ہوئے