بند کریں
شاعری ناصر کاظمی

چاند نکلا تو ہم نے وحشت میں

-

Chand nikla to ham


(228) ووٹ وصول ہوئے