بند کریں
شاعری ناصر کاظمیکوئی جئے یا کوئی مرے

(261) ووٹ وصول ہوئے