بند کریں
شاعری ناصر کاظمی

رونقیں تھیں جہاں میں کیا کیا کچھ

-

Raunqeen theen


(264) ووٹ وصول ہوئے