بند کریں
شاعری ناصر کاظمی

یہ شب یہ خیال و خواب تیرے

-

Yeh shaab yeh khayal


(621) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان