بند کریں
شاعری نوید‌رضا

میں کیوں اداس ہوں یاروں سے پوچھتا رہا میں

-

main kiyon udass hoon yaroon se pochta raha main


(259) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان