بند کریں
شاعری ناظم الدین خلش

وجود ذات سمیٹے ہوئے گزرتا ہے

-

wajood e zaat sameete hue guzarta hai


(269) ووٹ وصول ہوئے