بند کریں
شاعری عبید اللہ علیم

گزرو نہ اس طرح کہ تماشا نہیں ہوں میں

-

guzro na iss tarhaan k tamasha na bane


(335) ووٹ وصول ہوئے