بند کریں
شاعری پروین شاکرماہ تمام

بچھڑا ہے جو اک بار تو ملتے نہیں دیکھا

-

Bichra hai jo ek


(254) ووٹ وصول ہوئے